حق خود ارادیت ہی مسئلہ کشمیر کا حل ہے ۔ حریت کانفرنس آزاد کشمیر کے اجلاس میں اعلان
Posted Sun, 10/18/2009 – 11:10
مظفر آباد: آج یہاں کل جما عتی حریت کانفرنس آزاد کشمیر کا ایک اجلا س ہوا ۔ جس کی صدارت حریت کانفرنس کے کنو نیر اور پیپلز فریڈم لیگ کے چئیرمین محمد فاروق رحمانی نے کی۔ اجلاس میں ریاست کی مو جو دہ صورت حال اور مذا کرات کے با رے میں تجا ویز کاجا ئزہ لیا گیا اور عالمی برادری سے مطا لبہ کیا گیا کہ وہ بھارت کو جموں و کشمیر میں انسا نی حقوق کے احترام کا پا بند بنا ئے ، تمام سیاسی نظر بندوں کو رہا کیا جا ئے ، کا لے قوا نین منسوخ کرا ئے، تمام سیاسی نظربندوں کو رہا کیا جا ئے اور افواج ھند کے اِنخلا ءکی شروعا ت کرے۔ اجلاس میں اتفاق رائے سے اِس با ت کا اعا دہ کیا گیا کہ حق خود ارادیت مسئلہ کشمیر کے حل کی کنجی ہے‘ جس کو استعمال کئے بغیر مذاکرات بے معنی ثا بت ہو نگی۔

حریت کانفرنس کی مجلس شوریٰ نے حریت کے چیئر مین سید علی گیلانی کی گھر میںنظربندی کی مذمت کر تے ہوئے کہا کہ مذا کرات اور گرفتا ریاں سا تھ سا تھ نہیں چل سکتیں اور خوشگوار سیاسی ما حو ل پیدا نہیں ہوسکتا ۔ انہوں نے بھارت سے کہا کہ اگر وہ نیک نیتی کے سا تھ مسئلہ کشمیر حل کر نا چا ہتا ہے‘ تو اُسے خیر سگا لی کے غیر معمو لی اقدا مات کر نا ہوں گے ۔ جو زمین پر نظر آنے چا ہیں۔

فی الوقت بھارت جا رحیت اور شدت پسندی پر ہی عمل کر رہا ہے ۔ کشمیری عوام کی بے مثا ل قربا نیوں کو خرا ج عقیدت پیش کرتے ہو ئے حریت قائدین نے کہا کہ حریت کانفرنس حق خود ارادیت کے اصول پر چٹا ن بن کر کھڑی ہے ۔ جس سے منہ موڑنے کا سوال پیدا نہیں ہوتا۔ اجلاس میں غلام نبی نو شہری،غلا م محمد صفی،اشتیاق حمید،عبدالمجید میر،شوکت حسین بٹ،شوکت حسین وانی،محمد سلطا ن بٹ نے شرکت کی۔

Print Friendly, PDF & Email